انسانیت کے سارے مسائل کا حل قرآن کریم میں موجود ہے /مولانا اصغر علی امام مہدی سلفی

مرکزی جمعیت اہل حدیث ہند کے زیر اہتمام اور صوبائی جمعیت اہل حدیث آندھراپردیش کے زیر انتظام
دو ‘ روزہ آل انڈیا مسابقہ حفظ وتجویدو تفسیر قرآن کریم حیدرآباد میںبحسن خوبی اختتام پذیر
معزز شخصیات کے ہاتھوں پوزیشن حاصل کرنے والے طلبہ کو گراں قدر انعامات سے نوازا گیا
اورماہنامہ گلستان اہل حدیث کا اجراء عمل میں آیا 
حیدرآباد :4 /ستمبر 0122
قرآن کریم ساری انسانیت کے لئے ہی۔اس کا حق یہ ہے کہ اس کو مخارج کی رعایت اور خوش الحانی کے ساتھ پڑھا جائے ۔اس کے معانی کو سمجھا جائے اور اس کی عمدہ اور انسانیت نواز تعلیمات پر عمل کیا جائے اور اس کے پیغام انسانیت کو عام کیا جائے ۔قرآن مجیداللہ تعالی کا کلام ہے ۔قرآن کریم اور حدیث کی تعلیمات کو اپنانے میں ہماری حقیقی زندگی ‘ نجات اور بقا ہے ۔اللہ اوراس کے رسول کی پکارپرلبیک کہنے سے حیات جاوداں اور سعادت دارین حاصل ہوگی ملک وملت اور انسانیت کی مسائل حل ہوں گے ۔اور ہر طرف امن وسکون ‘اخوت ومحبت ‘اتحاد ویگانگت‘ اعلی اخلاق وکردار اور ایمان و یقین کی باد بہاری چلے گی ۔ان خیالات کا اظہار مولانا اصغر علی امام مہدی سلفی ناظم عمومی مرکزی جمعیت اہل حدیث ہند نے کیا ۔موصوف کل مؤرخہ3 /ستمبر 2012 کی شام کو ایلیشن گارڈن حیدرآباد میں منعقد تیرہواں دو روزہ آل انڈیا مسابقہء حفظ وتجوید وتفسیر قرآن کریم کے اختتامی اجلاس میں کلیدی خطاب کررہے تھی۔
انہوں نے کہاایسے وقت جب کہ دنیا کے اندر انسانیت دشمن عناصر کی طرف سے قرآن کریم اور پیغمبر اسلام کی شان میںگستاخی کی جارہی ہے ہماری ذمہ داری ہے کہ ہم قرآن کریم کی تعلیمات کا پیکر بن کر اس کی تعلیمات کو عام کریں ۔فلم کے ذریعہ رسول گرامی کی کردار کشی بلاشبہ قابل مذمت ہے لیکن احتجاج کی نام پر مشتعل ہونا ‘سڑکوں پر آنااورآگ جلانا اوراپنے آپ کو ہلاکت میں ڈالنا قرآن اور پیغمبر اسلام کی روشن تعلیمات اور سلف صالحین کے عمل سے میل نہیں کھاتا ۔


صدر اجلاس مولانا صفی احمد مدنی امیر صوبائی جمعیت اہل حدیث آندھرا پردیش نے فرمایا قرآن مجید صحیفہء علم ومعرفت اور ہدایت ہے ۔اس کا اعجاز تا قیامت باقی رہے گا ۔مرکزی جمعیت اہل حدیث ہند قابل مبارکباد ہے کہ وہ قرآنی تعلیمات کو عام کرنے امت کا رشتہ قرآن سے جوڑنے اور نئی نسل کے اندر تلاوت وفہم قرآن کا شوق وجذبہ پیداکرنے کے لئے ہر سال ملکی سطح پر مسابقات حفظ وتجوید وتفسیر قرآن کریم کا انعقاد کرتی ہی۔
خطبہء استقبالیہ پیش کرتے ہوئے ناظم  صوبائی جمعیت اہل حدیث آندھرا پردیش حافظ عبد القیوم صاحب نے کہا کہ قرآن کریم ایک ایسی کتاب ہے جس کوپڑھناپڑھانا ‘سننا سنانا اور اس کی تعلیمات کو زندگی کے ہر شعبہ میں نافذ کرنا باعث سعادت اور دنیوی واخروی کامیابی کا ذریعہ ہے ۔یہ ہمارے لئے اعزاز کی بات ہے کہ مرکزی جمعیت اہل حدیث ہند نے شہر حیدرآباد میں مسابقہ حفظ وتجوید کا انعقاد کیا ۔
حیدرآباد کے  ایم‘ ایل‘اے جناب احمد بلعلہ نے حیدرآباد میں مسابقہ کے انعقاد پر اظہار مسرت کرتے ہوئے مرکزی وصوبائی جمعیت اہل حدیث کو مبارکباد پیش کیا اور کہا کہ اس مسابقہ سے تلاوت قرآن ‘ فہم قرآن اور عمل بالقرآن کی فضاقائم ہوگی ۔
اجلاس کو خطاب کرتے ہوئے مولانا عبد اللہ مدنی حیدرآبادی ‘امیر صوبائی جمعیت اہل حدیث تمل ناڈنے قرآن کریم کے مختلف گوشوں پر روشنی ڈالتے ہوئے کہا کہ قرآن کریم اللہ تعالی کا کلام ہے اور قیامت تک اس میں کوئی تبدیلی نہیں ہو سکتی ۔قرآن وسنت پر عمل کرنے والے ہمیشہ غالب رہیں گی۔
مسابقہ کے حکم قاری نصیر الدین منشاوی ڈائر کٹر حفظ وقراء ت اکیڈمی حیدرآباد نے کہا کہ مرکزی جمعیت اہل حدیث ہند کے زیر اہتمام اس مسابقہ حفظ وتجوید کو میں نے دیکھا ۔مقابلہ بہت صاف ستھرا اور معیاری ہی۔جن بچوں کا میں نے امتحان لیا وہ اس قابل ہیں کہ ان کو عالمی مسابقوں میں شریک کیا جائے ۔انہوں نے حیدرآباد میں مسابقہ کے انعقاد پر منتظمین کو مبارکباد پیش کیا ۔
اس اختتامی اجلاس کو دیگر معززین نے بھی خطاب کیا ان میں مولانا محمد ہارون سنابلی‘ مولانا عبد الرحیم مکی ‘مولانا سیدحسین مدنی‘ مولانا عبد الرحیم مدنی وغیرہ قابل ذکر ہیں۔اس موقع پرمولانا شفیق عالم صاحب جامعی نے ناظم عمومی مرکزی جمعیت اہل حدیث کی خدمت میں صوبائی جمعیت اہل حدیث آندھرا پردیش کی طرف سے سپاس نامہ اور مومنٹو پیش کیا۔اس موقع پر ناظم عمومی ودیگر معززین کے ہاتھوں صوبائی جمعیت اہل حدیث آندھراپردیش کے ترجمان ماہنامہ ’’ گلستان اہل حدیث‘‘ کا اجرا عمل میں آیا اور اہم مہمانوں کی شال پوشی کی گئی۔
پریس ریلیز کی مطابق اساختتامی اجلاس میں مسابقہ کے ہر زمرہ میں اول پوزیشن حاصل کرنے والے قراء کامظاہرہ ء قراء ت بھی ہوا بعدازاں ان چھ زمروں میں اول‘  دوم اور سوم پوزیشن حاصل کرنے والے خوش نصیب حفاظ وقراء کو گراں قدر نقد انعامات اور توصیفی اسناد ودگر تشجیعی انعامات سے معززین کے ہاتھوں نوازا گیا۔ اس مسابقہ میںملک کے مختلف حصوں سے تقریبا 200 طلبہ شریک ہوے اور ان تمام شرکاء کوبھی توصیفی اسناد اورتشجیعی انعامات سے نوازا گیا ۔مختلف مکاتب فکر سے تعلق رکھنے والی8 نامور قراء کرام نے حکم کے فرائض انجام دئیی۔ اس موقع پر سینکڑوں سامعین کے علاوہ متعدد مقتد رعلمی ‘ دعوتی ‘ تعلیمی اور سماجی شخصیات موجود تھیں  ۔ان میں جناب محمد شریف یمانی ‘ مولانا الطاف الرحمن مدنی ‘ جناب عبد الرافع صدیقی ‘ مولانا عبد القدوس عمری ‘ مولانا عبد الجلیل مکی ‘ مولانا منیر احمد عمری ‘ جناب عبد القادر ‘ جناب عبد الواسع ‘ مولانا عبد اللطیف ‘ مولانا ابو الحسن پرتاب گڑھی ‘ قاری عماد الدین مدنی ‘ قاری محمد شعیب مدنی ‘ قاری سید واجد مدنی ‘ قاری عبد المتین ‘ قاری فیاض احمد ‘ مولانا نعیم اللہ سنابلی ‘جناب محمود علی ‘ جناب فضل اللہ ‘ مولانا عبد الرحمن فاروقی ‘ مولانا امیر علی ‘ جناب عبد الحق محمدی وغیرہ ہیں ۔
تلاوت قاری نصیر الدین منشاوی نے کی ۔اور نظامت کے فرائض کنوینر مسابقہ مولانا محمد شیث ادریس تیمی نے انجام دئیے ۔جناب عبد الوحید صاحب صدر جامعہ دارالفرقان (للبنات) نے سامعین کا شکریہ ادا کیا ۔
 مختلف زمروں میں پوزیشن حاصل کرنے والوں کی تفصیل حسب ذیل ہے
زمرہ اولحفظ قرآن کریم (مکمل)     
 اول  ڈی پی جیلان باشا بن ڈی پی چنداولی  جامعہ دار السلام عمرآباد   
 دوم  محمد کاشف بن ہمایوں ظفر  جامعہ عربیہ قاسم العلوم ، بلند شہر ،یوپی    
 سوم  خالد اشرف بن عبد الواحد  صوبائی جمعیت اہل حدیث آندھراپردیش 
                            زمرہ دوم   حفظ قرآن کریم (بیس پاری) 
 اول  محمد اجمل بن محمداسلم   جامعہ عالیہ عربیہ ،مئوناتھ بھنجن  یوپی   
 دوم  محمد مرسلین بن عیش محمد  جامعۃ الامام ابن تیمیہ ، بہار  
 سوم  محمداسلم بن احمد  جامعہ محمدیہ ، رائیدرگ ، آندھراپردیش  
  زمرہ سوم  حفظ قرآن کریم (دس پارے )   
 اول  عبد العظیم بن عبد اللطیف جامعہ اثریہ دار الحدیث ، مئو ،یوپی   
 دوم  شیخ فرید بن شیخ امام   جامعہ محمدیہ منصورہ ، مالیگاؤں ، مہاراشٹر  
 سوم  محمد علقمہ بن محمدمطیع اللہ  ادارہ تعلیم القرآن کیونجھر ، اڑیسہ 
زمرہ چہارم   حفظ قرآن کریم (پانچ پاری) 
 اول  سرمد عالم بن رفیق عالم  جامعہ امام ابن تیمیہ ، بہار   
 دوم  شیخ شعیب علی بن شیخ سلیم  مدرسہ مسجد عزیزیہ ، حیدرآباد  
 سوم  عبد الرحمن بن محمد قاسم        جامعہ ابو ہریرہ الاسلامیہ، الٰہ آباد ،یوپی  
زمرہ پنجم  ناظرہ قرآن کریم (کامل)  
 اول  محمد شعیب بن شرف الدین  شرفیہ قراء ت ، اکیڈمی ،حیدرآباد  
 دوم  محمد عمر بن محمد عبداللہ خان  مدرسہ فتح دروازہ، حیدرآباد  
 سوم  وصی اللہ بن عبدا لرشید  جامعہ ابو ہریرہ الاسلامیہ ، الٰہ آباد ،یوپی 
زمرہ ششم   ترجمہ وتفسیر  قرآن کریم  ( تحریری امتحان)  
 اول  محمد فیصل بن عبد القیوم   جامعہ دار السلام عمر آباد،تاملناڈو   
 دوم  محمد ابرار بن پٹنول عبد العلیم جامعہ محمدیہ منصورہ مالیگاؤں ، مہاراشتڑ  
 سوم  محمد توفیق احمد بن محمد عباس علی جامعہ دار السلام عمر آباد،تاملناڈ

The Collective Fatwa against Daish and those of its ilk

ہمارے رسائل وجرائد

http://www.ahlehadees.org/modules/mod_image_show_gk4/cache/al-isteqamah2gk-is-214.jpglink
http://www.ahlehadees.org/modules/mod_image_show_gk4/cache/islahe-samaj2gk-is-214.jpglink
http://www.ahlehadees.org/modules/mod_image_show_gk4/cache/jareeda-tarjumah2gk-is-214.jpglink
http://www.ahlehadees.org/modules/mod_image_show_gk4/cache/the-symple-truth2gk-is-214.jpglink
«
»
Loading…