مرکز کی سرگرمیاں

Children categories

مرکزی جمعیت اہل حدیث ہند کی مجلس عاملہ کا اہم اجلاس اختتام پذیر ملک وملت وانسانیت سے متعلق مسائل زیر غور

مرکزی جمعیت اہل حدیث ہند کی مجلس عاملہ کا اہم اجلاس اختتام پذیر ملک وملت وانسانیت سے متعلق مسائل زیر غور (0)

۳۴ویں آل انڈیا اہل حدیث کانفرنس بنگلور میں
نئی دہلیـ۱۹مارچ۲۰۱۷ء
مرکزی جمعیت اہل حدیث ہند کی پریس ریلیز کے مطابق آج مورخہ۱۹مارچ۲۰۱۷ء کو مرکزی جمعیت اہل حدیث ہند کی مجلس عاملہ کا ایک اہم اجلاس زیر صدارت جناب حافظ محمد عبدالقیوم نائب امیر مرکزی جمعیت اہل حدیث ہند بمقام اہل حدیث کمپلیکس، اوکھلا، نئی دہلی منعقد ہوا جس میں تقریبا ۲۱ صوبوں سے بڑی تعداد میں اراکین مجلس عاملہ ومدعوئین خصوصی نے شرکت کی۔ اور ملک وملت نیزجماعت کو درپیش مسائل کاجائزہ لیا ۔ناظم عمومی مولانا اصغر علی امام مہدی سلفی مرکزی جمعیت اہلحدیث ہند کی ہمہ جہت دعوتی، تعلیمی، ملی وانسانی خدمات سے متعلق رپورٹ اور ناظم مالیات الحاج وکیل پرویز صاحب نے سالانہ حساب کتاب پیش کیا جس پر موقر اراکین نے اظہار اطمینان و مسرت فرمایا۔ اجلاس میں من جملہ دیگر امور کے طے پایا کہ ۳۴ویں آل انڈیا اہل حدیث کانفرنس بنگلور میں ہوگی۔ نیز یہ کہ صوبائی جمعیات کے انتخابات وقت کے اندر ہوں۔جمعیت کی تعمیر وترقی کے لیے منصوبے زیر غور آئے۔ اتفاق رائے سے کئی اہم ملی، ملکی اور جماعتی حالات کے پیش نظر فیصلے کئے گئے اور کافی غور وخوض کے بعد ملک وملت اور انسانیت سے متعلق درج ذیل قرار دادیں پاس کی گئیں۔

sمجلس عاملہ کی قرارداد میں اسلامی تعلیمات کے مطابق زندگی گزارنے اور برادران وطن کو اسلامی تعلیمات سے روشناس کرانی، امن وشانتی کا پیغام عام کرنے ،بھائی چارہ وقومی یکجہتی کے کوشش کرنے پر زوردیاگیا۔اجلاس میںبابری مسجد قضیہ کے جلد ازفیصل کرانے ، بے قصور مسلم نوجوانوں کو ہراساں کرنے والے خاطی پولس افسران کو قانون کے دائرے میں لانے اور ملک میں بڑھتی مہنگائی پر قابو پانے کی اپیل کی گئی ہے۔ علاوہ ازیں برادران وطن اورمسلمانوں سے اپیل کی گئی ہے کہ وہ شراب نوشی ودیگر منشیات سے پرہیز کریں اورنوجوانوں میں پائی جانے والی اخلاق باختہ برائیوں کو دور کرنے کے لئے مخلصانہ کوشش کریں۔
مجلس عاملہ کی قرارداد میں انسداد فرقہ وارانہ فساد بل کو پاس کرانے اور انتظامیہ کو فسادات میں جواب دہ بنانے کی اپیل اور ملک میں عصمت دری کے واقعات پر اظہار تشویش کیا گیاہے۔ قرار داد میں پولس اورنیم فوجی دستوں میں مسلم نمائندگی کویقینی بنانے کے حکومتی فیصلہ کا خیر مقدم کیا گیاہے۔ مسلمانوں کے خلاف دھمکی آمیز و نفرت انگیز بیانات پراظہار تشویش کیا گیا۔اجلاس میںجماعت کے اندر انتشار وخلفشار پیداکرنے والوں اورتنظیمی امور کو سبوتاژ کرنے والوںنیزجمعیت کے ذمہ داران پربے سروپاالزام لگانے والوں کی بھی مذمت کی گئی اور وسیع تر جماعتی مفادات کے پیش نظرانہیں اپنی حرکتوں سے باز رہنے کی تلقین کی گئی۔
مجلس عاملہ کی قرارداد میں داعش اور اس کی دہشت گردی کی مذمت اور مرکزی جمعیت اہل حدیث ہند کے زیراہتمام ’’داعش اوردہشت گردی کی بیخ کنی میں قومی یکجہتی کا کردار‘‘ کے عنوان پر منعقدہ سیمینارکو وقت کی ضرورت قرار دیا گیا ہے۔
قرارداد میں اسرائیلی جارحیت، اسلامی مقدسات کی بے حرمتی اور فلسطینیوں پہ عرصہ حیات تنگ کرنے کی مذمت اورفلسطینیوں سے اظہار ہمدردی اوران کے کاز کی حمایت کی گئی ہے ،اسی طرح سے عراق افغانستان وغیرہ میں مسلسل ہورہے جانی ومالی نقصانات پراظہار تشویش کیا گیا ہے اور انصاف پسند اقوام عالم سے یہ اپیل کی گئی ہے کہ متعلقہ ممالک میں اقتدار اعلیٰ کو عوام کے حوالہ کیا جائے۔قرارداد میں ملی وجماعتی اہم شخصیات کی وفیات پر بھی اظہار رنج وغم اور ان کے پسماندگان سے اظہار تعزیت کیاگیا

View items...


سولہواں آل انڈیا مسابقہ حفظ و تجوید و تفسیر قرآن کریم کی تیاری آخری مرحلے میں
رجسٹریشن شباب پر، فارم موصول ہونے کی آخری تاریخ ۵۲/اگست ۵۱۰۲ء
دہلی:۰۱اگست ۵۱۰۲ء
مرکزی جمعیت اہل حدیث ہند کے ناظم عمومی مولانا اصغر علی امام مہدی سلفی نے اخبار کے نام جاری ایک بیان میں کہا ہے کہ مرکزی جمعیت اہل حدیث ہند کے زیر اہتمام سولہواں دو روزہ آل انڈیا مسابقہ حفظ وتجوید و تفسیر قرآن کریم جو ۹۲ اگست ۵۱۰۲ء کی صبح سے شروع ہوکر ۰۳ اگست ۵۱۰۲ء کی شام تک جاری رہے گا کی تیاریاں آخری مرحلے میں ہیں۔ گزشتہ سالوں کی طرح امسال بھی مسابقہ کے تعلق سے ملک کے طول وعرض میں کافی جوش وخروش پایا جارہا ہی۔ پورے ملک سے بڑی تعداد میں داخلہ فارم موصول ہورہے ہیں ۔ امیدواروں کی سہولت کے لیے داخلہ فارم مرکزی جمعیت اہل حدیث ہند کی ویب سائٹ پر بھی دستیاب کرایا گیا ہی۔ نیز مرکزی جمعیت کے پندرہ روزہ جریدہ ترجمان میں بھی مسلسل شائع کیا گیا ہی۔ رجسٹریشن فارم موصول ہونے کی آخری تاریخ ۵۲/اگست ۵۱۰۲ء ؁ہی۔
ناظم عمومی نے کہا کہ ایسے وقت میں جب کہ اللہ کے بندوں کا رشتہ اپنے خالق سے کمزور پڑ گیا ہی، مادیت دن بدن روحانیت پر غالب آتی جارہی ہی، آپس میں ایک دوسرے کے احترام کا جذبہ ختم ہورہا ہی، انسانیت اپنے بھائی بندوں کے درمیان اجنبی بنتی جارہی ہے اور دنیاپیار و محبت اور امن و شانتی کی متلاشی ہی، ضرورت ہے کہ اللہ کا پیغام جو قرآن کریم کی صورت میں موجود ہے وسیع پیمانے پر اس کے بندوں تک پہنچایا جائے اور اس کا بھولا ہوا سبق یاد دلایاجائے ۔ مرکزی جمعیت انہی مقاصد کے تحت ہر سال آل انڈیا مسابقہ حفظ وتجوید وتفسیر قرآن کریم منعقد کر کے ملک و معاشرہ میں تلاوت وفہم قرآن کی یہی جوت جگانا چاہتی ہی۔


سولہواں آل انڈیا مسابقہ حفظ و تجوید و تفسیر قرآن کریم کی تیاری آخری مرحلے میں
رجسٹریشن شباب پر، فارم موصول ہونے کی آخری تاریخ ۵۲/اگست ۵۱۰۲ء
دہلی:۰۱اگست ۵۱۰۲ء
مرکزی جمعیت اہل حدیث ہند کے ناظم عمومی مولانا اصغر علی امام مہدی سلفی نے اخبار کے نام جاری ایک بیان میں کہا ہے کہ مرکزی جمعیت اہل حدیث ہند کے زیر اہتمام سولہواں دو روزہ آل انڈیا مسابقہ حفظ وتجوید و تفسیر قرآن کریم جو ۹۲ اگست ۵۱۰۲ء کی صبح سے شروع ہوکر ۰۳ اگست ۵۱۰۲ء کی شام تک جاری رہے گا کی تیاریاں آخری مرحلے میں ہیں۔ گزشتہ سالوں کی طرح امسال بھی مسابقہ کے تعلق سے ملک کے طول وعرض میں کافی جوش وخروش پایا جارہا ہی۔ پورے ملک سے بڑی تعداد میں داخلہ فارم موصول ہورہے ہیں ۔ امیدواروں کی سہولت کے لیے داخلہ فارم مرکزی جمعیت اہل حدیث ہند کی ویب سائٹ پر بھی دستیاب کرایا گیا ہی۔ نیز مرکزی جمعیت کے پندرہ روزہ جریدہ ترجمان میں بھی مسلسل شائع کیا گیا ہی۔ رجسٹریشن فارم موصول ہونے کی آخری تاریخ ۵۲/اگست ۵۱۰۲ء ؁ہی۔
ناظم عمومی نے کہا کہ ایسے وقت میں جب کہ اللہ کے بندوں کا رشتہ اپنے خالق سے کمزور پڑ گیا ہی، مادیت دن بدن روحانیت پر غالب آتی جارہی ہی، آپس میں ایک دوسرے کے احترام کا جذبہ ختم ہورہا ہی، انسانیت اپنے بھائی بندوں کے درمیان اجنبی بنتی جارہی ہے اور دنیاپیار و محبت اور امن و شانتی کی متلاشی ہی، ضرورت ہے کہ اللہ کا پیغام جو قرآن کریم کی صورت میں موجود ہے وسیع پیمانے پر اس کے بندوں تک پہنچایا جائے اور اس کا بھولا ہوا سبق یاد دلایاجائے ۔ مرکزی جمعیت انہی مقاصد کے تحت ہر سال آل انڈیا مسابقہ حفظ وتجوید وتفسیر قرآن کریم منعقد کر کے ملک و معاشرہ میں تلاوت وفہم قرآن کی یہی جوت جگانا چاہتی ہی۔

پورے ملک سے اراکین عاملہ و ذمہ داران صوبائی جمعیات کی شرکت ، ملک و ملت ، جماعت اور انسانیت سے متعلق اہم فیصلے
۳۳ ویں آل انڈیا اہل حدیث کانفرنس کے انعقاد کومنظوری
دہلی: ۶۱/ فروری ۵۱۰۲ء
Y
مرکزی جمعیت اہل حدیث ہند کے ناظم عمومی مولانا اصغر علی امام مہدی سلفی نے اخبار کے نام جاری ایک بیان میں کہا کہ کل مورخہ ۵۱/ فروری ۵۱۰۲ء کو مرکزی جمعیت اہل حدیث ہند کی مجلس عاملہ کا ایک اہم اجلاس بمقام اہل حدیث کمپلیکس ، ابو الفضل انکلیو، جامعہ نگر نئی دہلی منعقد ہوا جس میں پورے ملک سے موقر اراکین مجلس عاملہ و ذمہ داران صوبائی جمعیات اہل حدیث شریک ہوئے اور ملک و ملت، جماعت اور انسانیت کو درپیش مسائل پر غور و خوض ہوا، ان سے متعلق اہم فیصلے ہوئے اور قرار دادیں پاس ہوئیں ۔ حسب ایجنڈا ناظم عمومی نے مرکزی جمعیت اہل حدیث ہند کی ہمہ جہت دینی، ملی، ملکی اور انسانی خدمات اور مختلف شعبوں مثلا شعبہ دعوت وارشاد، شعبہ تعلیم وتربیت، شعبہ نشرو اشاعت، شعبہ افتاء و مجلس تحقیق علمی، شعبہ رفاہ عامہ و ریلیف وغیرہ کی پیش رفت پر مشتمل تحریری رپورٹ اور ناظم مالیات الحاج وکیل پرویز نے مالیات کی سالانہ رپورٹ پیش کی جس پر ہائوس نے اطمینان و خوشی کا اظہار کیا اور بھر پور تائید و تصدیق فرمائی۔ نیز مرکزی جمعیت جس کا دہشت گردی کے روک تھام میں اہم رول رہا ہی، کے ذریعہ داعش جیسی دہشت گرد تنظیم کے خلاف اجتماعی فتوے کے اجرا کو وقت کی ضرورت قرار دیا اور اس مناسبت سے عالمی دہشت گردی ، داعش کی خود ساختہ خلافت اور اسلام کا پیغام امن کے موضوع پر قومی سمپوزیم کے انعقاد کی تحسین و تعریف کی اور توقع ظاہر کی کہ اس سمپوزیم اور فتویٰ کے دور رس نتائج برآمد ہوں گی۔ اور فیصلہ کیا کہ موجودہ وقت میں ۳۳ویں آل انڈیا اہل حدیث کانفرنس کا انعقاد ضروری ہی۔

داعش ایک دہشت گرد تنظیم ہے اور اس کی خلافت خود ساختہ اور سرا سر غیر اسلامی ہی
مرکزی جمعیت اہل حدیث ہند کے زیر اہتمام قومی سمپوزیم بعنوان ’’عالمی دہشت گردی ، داعش کی خودساختہ خلافت اور اسلام کا پیغام امن‘‘ میں علماء و مفتیان کرام کا اظہار خیال
دہلی:۵۱/ فروری ۵۱۰۲ء
اس وقت دہشت گردی دنیا کا سب سے بڑا چیلنج بنا ہوا ہی۔ انسانیت کی بقا، امن وشانتی کے قیام اور دنیا کی سعادت وبھلائی کے لیے اس کا خاتمہ ضروری ہی۔ اسلام اس کی بہر نوع مذمت کرتا ہی۔ نام نہاد داعش اپنی غیر ذمہ دارانہ، دین مخالف ،انسانیت بیزار حرکتوں کی وجہ سے عالمی سطح پر اسلام اور مسلمانوں کی شبیہ بگاڑ نے میں کلیدی رول ادا کر رہا ہی۔ اس کا دعوئ خلافت غیر اسلامی اور دہشت گردانہ ہے یہ تنظیم اسلام مخالف طاقتوں کی کاشتہ و پرداختہ معلوم ہوتا ہی۔ لیکن افسوس کی بات یہ ہے کہ ناواقف لوگ اس کے اسلامی نام اور اصطلاح سے دھوکہ کھاکر اس کے دام ہم رنگ زمیں کے شکار ہوجاتے ہیں۔ ان خیالات کا اظہار مرکزی جمعیت اہل حدیث ہند کے ناظم عمومی مولانا اصغر علی امام مہدی سلفی نے کیا۔ موصوف آج بتاریخ ۵۱/ فروری ۵۱۰۲ء بمقام اہل حدیث کمپلیکس وکھلا، نئی دہلی میں مرکزی جمعیت اہل حدیث ہند کے زیر اہتمام قومی سمپوزیم بعنوان’’ عالمی دہشت گردی ، داعش کی خود ساختہ خلافت اور اسلام کا پیغام امن ‘‘ میں حاضرین اور میڈیا سے خطاب کررہے تھے ۔

Page 5 of 16

The Collective Fatwa against Daish and those of its ilk

ہمارے رسائل وجرائد

http://www.ahlehadees.org/modules/mod_image_show_gk4/cache/al-isteqamah2gk-is-214.jpglink
http://www.ahlehadees.org/modules/mod_image_show_gk4/cache/islahe-samaj2gk-is-214.jpglink
http://www.ahlehadees.org/modules/mod_image_show_gk4/cache/jareeda-tarjumah2gk-is-214.jpglink
http://www.ahlehadees.org/modules/mod_image_show_gk4/cache/the-symple-truth2gk-is-214.jpglink
«
»
Loading…